Discy Latest Questions

  1. جواب : شاداں نے ہار کو اٹھایا تو چیخ مار کر بولی : ”لہو لہو، ہار پر لہو۔ سچ مچ لہو!“ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0
  1. جواب : رضیہ نے سایہ دیکھ کر اپنے بھائی جاوید کا نام لیا۔ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0
  1. جواب : رضیہ کے والد نے فاطمہ کو تسلی دینے کے لیے کہا : ”یہ سعادت دنیا میں بہت خوش نصیبوں کے حصے میں آتی ہے۔ شہادت کو تم کیا سمجھتی ہو؟ وطن کی خاطر جان دے دینا، یہ شرف ہر ایک کو کہاں نصیب ہوتا ہے!“ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0
  1. جواب : سال گرہ کے موقعے پر جاوید کو ڈیوٹی پر حاضر ہونے کا حکم ملا تھا۔ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0
  1. جواب : رضیہ کا بھائی جنگ میں شہید ہوگیا تھا اور آج اس کی سالگرہ کا دن تھا اس لیے رضیہ رو رہی تھی۔ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0
  1. جواب : جاوید کے مکان کی حالت ستمبر ۱۹۶۵ء کی بھارتی بم باری کی وجہ سے خراب تھی۔ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0
  1. جواب : جاوید شہید کا تعلق شہر قصور سے تھا۔ اس سبق کے خلاصے اور دیگر سوالات کے جوابات کے لیے یہاں کلک کریں

    • 0