Discy Latest Questions

  1. جواب : حق و باطل کے معرکے میں فتح کی حقدار ہمیشہ ملکہ صداقت بنتی کیونکہ سچائی و صداقت ہی انسان کا اصل ہیں اور دروغ دیو زاد وقتی طور پر تو اپنی فتح کے شادیانے بجا سکتا ہے لیکن دائمی فتح اس کے مقدر کا حصہ کسی طور نہیں ہوسکتی۔

    • 0
  1. جواب : دروغ دیو زاد کے ساتھ دنیا کی ہوا و ہوس، ہزاروں رسالے اور پلٹنیں تھیں۔ جب کبھی ملکہ اور دروغ دیو زاد آمنے سامنے آتے وہ لاف و گزاف کو حکم دیتا کہ شیخی اور نمود کے ساتھ آگے جا کر غل مچانا شروع کردو۔ دغا کو اشارہ کرتا کہ گھات لگا کر بیٹھ جاؤ، اس کے پاس طراری کی تلوار اور بےحیائی کی ڈھال ہوتی۔ غرضRead more

    • 0
  1. جواب : ملکہ صداقت کی رزم گاہ میں تصویر اس طرح کھینچی گئی ہے کہ وہ اپنے زور پر اکیلی اٹھی اور کسی کی مدد ساتھ نہ لائی اور اولادِ آدم میں اپنا نور پھیلانے چل دی۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ فتح و اقبال نور کا غبار اس کے آگے آگے اڑاتے تھے اور پیچھے پیچھے ادراک پر پرواز تھا لیکن معلوم ہوتا تھا کہ یہ سب ملکہRead more

    • 0
  1. جواب : یوں تو دروغ دیو زاد کو سلطانِ آسمانی کے دربار میں آنے کی اجازت نہیں تھی لیکن جب کبھی کسی تفریح کی صحبت میں تمسخر اور ظرافت کے بھانڈ آیا کرتے تھے تو وہ ان کی سنگت میں دربار میں آجاتا تھا۔

    • 0
  1. جواب : حمق تیرہ دماغ کو دروغ دیو زاد کا باپ اور ہوس ہوا پرست کو اس کی ماں اس لیے کہا گیا ہے کیونکہ انسان تب ہی کسی سے حسد کرتا ہے جب اس کا ذہن غلط جانب مائل ہوچکا ہوتا ہے اور اسے ہر چیز میں لالچ نظر آتی ہے۔ وہ چاہتا ہے ہر چیز اسے مل جائے اور پھر وہ دوسروں کی کامیابی سے جلنے لگتا ہے۔

    • 0
  1. جواب : سلطان آسمانی نے اپنی بیٹی صداقت زمانی کو حکم دیا کہ جاؤ اور جا کر اولادِ آدم میں اپنا نور پھیلاؤ کیونکہ صداقت ایک ایسی چیز ہے جو بنی نوع انسان کے لیے بہت زیادہ ضروری ہے۔ اگر انسان سچ نہ بولے تو ہمیں بہت سے نقصانات اٹھانے پڑھ سکتے ہیں۔

    • 0
  1. جواب : ملکہ صداقت زمانی کو سلطان آسمانی کی بیٹی اس لیے قرار دیا ہے کیوں کہ سلطان آسمانی سے مراد یہاں رب تعالیٰ ہے اور صداقت و سچائی رب کی ایک نمایاں خاصیت ہے۔ ملکہ دانش خاتون کو صداقت زمانی کی کی ماں اس لیے قرار دیا گیا ہے کیونکہ جو بھی شخص دانشمند ہوتا ہے وہ ہمشیہ صداقت کو ترجیح دیتا ہے۔

    • 0