Discy Latest Questions

  1. جواب : فصاحت کے لیے روز مرہ کی پابندی ضروری ہے کیونکہ روزمرہ سادہ زبان و الفاظ کا مرکب ہوتے ہیں جو بولنے اور سننے والے کو باآسانی سمجھ آجاتے ہیں۔ مگر چند خاص موقعوں پر محاوروں کا استعمال بھی ضروری ہوتا ہے، اس سے بول چال میں خوبصورتی اور گہرے معنی پیدا ہوتے ہیں۔

    • 0
  1. جواب : محاورے کا اطلاق ان افعال پر ہوتا ہے جو کسی اسم سے مل کر حقیقی نہیں بلکہ مجازی معنی میں استعمال ہوتے ہیں۔ جیسے اتارنا اس کے حقیقی معنی کسی جسم کو اوپر سے نیچے لانا ہیں۔ مثلاً تار سے کپڑے اتارنا، شیلف سے کتاب اتارنا جبکہ نقل اتارنا، دل سے اتارنا محاورے کہلائیں گے۔ کھانا جس کے حقیقی معنی ہیں دانRead more

    • 0
  1. جواب : روزمرہ سے مراد وہ الفاظ ہوتے ہیں جن کے لغت میں معنی موجود ہوں اور یہ بولنے والوں کی عام زبان ہوتے ہیں۔ ان میں مفرد الفاظ کا استعمال کیا جاتا ہے۔ جبکہ محاورے میں دو یا دو سے زائد الفاظ کا استعمال کیا جاتا ہے اور اس کے دو معنی ہوتے ہیں، ایک لفظ کے معنی حقیقی اور دوسرے لفظ کے معنی مجازی ہوتے ہیںRead more

    • 0
  1. جواب : محاروے کا اطلاق مفرد لفظ پر اس لیے نہیں ہوتا کیونکہ کے مفرد لفظ اکیلا ہوتا ہے اور مفرد الفاظ کے معنی علیحدہ علیحدہ بھی ہوسکتے ہیں، لیکن جب دو یا دو سے زائد الفاظ کا ایک ساتھ استعمال ہو تو وہ ایک ہی معنی رکھتے ہیں۔ اور ان کے معنی مجازی ہوتے ہیں۔

    • 0