سوال: غزل کے پہلے اور چوتھے شعر کی وضاحت کیجیے۔

1 Answer

  1. جواب : اس غزل کے پہلے شعر میں شاعر خود پر ہونے والے ستم اور اپنی بیچارگی کو سہل اور لطیف انداز میں بیان کررہے ہیں۔ وہ اس شعر میں اپنے محبوب سے مخاطب ہو کر کہتے ہیں کہ تم ہر بات میں مجھے کہتے ہو کہ میں کون ہوں تو تم ہی بتاؤ کہ یہ بات کرنے کا کون سا انداز ہے جس میں سامنے والے شخص کو بےعزت کیا جائے۔

    اس غزل کے چوتھے شعر میں شاعر اپنے بکھرے ہوئے جذبات کو سمیٹ رہے ہیں اور نہایت وسیع مفہوم کو دو مصرعوں میں بیان کررہے ہیں۔ وہ کہتے ہیں کہ بے مصرف اور احساسِ انسانیت سے عاری زندگی کسی کام کی نہیں ہے ، انسان کے دکھ اور درد میں شریک رہنا ہی انسانیت ہے ورنہ یہ زندگی بیکار ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ جب تک انسان کا احساس اور محبت اس کی آنکھوں سے لہو بن کر نہ ٹپکے تب تک اس محبت کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔

    • 0